مقبوضہ بیت المقدس کو دارالحکومت بنانے کا فیصلہ، فرانس میں ٹرمپ کیخلاف مظاہرہ

مقبوضہ بیت المقدس کو دارالحکومت بنانے کا فیصلہ، فرانس میں ٹرمپ کیخلاف مظاہرہ پیرس (آزاد دنیا نیوز) فرانس کے دارالحکومت پیرس میں بھی ہزاروں افراد نے امریکہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے امریکی صدر ٹرمپ کے فیصلے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے مسلمانوں پر حملہ قرار دیا ہے۔ مظاہرین نے فلسطینی عوام کی حمایت کرتے ہوئے امریکہ اور اسرائیل کے خلاف نعرے بازی کی

پیرس (آزاد دنیا نیوز) فرانس کے دارالحکومت پیرس میں بھی ہزاروں افراد نے امریکہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کے امریکی صدر ٹرمپ کے فیصلے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے مسلمانوں پر حملہ قرار دیا ہے۔ مظاہرین نے فلسطینی عوام کی حمایت کرتے ہوئے امریکہ اور اسرائیل کے خلاف نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں فلسطینی پرچم، بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے، جن پر اسرائیلی صدر نیتن یاہو کیخلاف مختلف نعرے بھی درج تھے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ کا بیان مسلمانوں کیخلاف اعلان جنگ ہے۔ عالمی برادری اور خصوصی طور پر اقوام متحدہ امریکی صدر کے بیان کا نوٹس لے اور ڈونلڈ ٹرمپ پر زور دے کہ وہ اپنا بیان واپس لینے کے ساتھ ساتھ دنیا بھر کے مسلمانوں سے معافی مانگیں۔ امریکہ، برطانیہ، یورپی اور ایشیائی ممالک سمیت دنیا بھر میں بسنے والے مسلمان امریکی صدر کے فیصلے کے خلاف احتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں